1 تبصرہ

عِلموں بس کریں او یار! بُلّھے شاہ

عِلموں بس کریں او یار!

 اِکّو الف ترے درکار

 عِلم نہ آوے وچ شُمار!

 جاندی عُمر، نہیں اِعتبار

 اِکّو الف ترے درکار

 عِلموں بس کریں او یار!

 عِلموں بس کریں او یار!

 پڑھ پڑھ لکھ لکھ لاویں ڈھیر

 ڈھیر کتاباں چار چوپھیر

 گِردے چانن وچّ انھیر

 پُچھّو: “راہ؟“ تے خبر نہ سار

 عِلموں بس کریں او یار!

 پڑھ پڑھ نفل نماز گزاریں

 اُچیاں بانگاں، چانگاں ماریں

 مِنبر تے چڑھ، وُعظ پُکاریں

 کیتا تینوں علم خوار

 عِلموں بس کریں او یار!

 عِلموں پئے قِضیّے ہور

   اکھّاں والے انّھے کور

 پھڑدے سادھ، تے چھڈن چور

 دو ہِیں جہانِیں، ہون خوار

 عِلموں بس کریں او یار!

ڑھ پڑھ شیخ مشائخ کہاویں

 اُلٹے مَسلے گھروں بناویں

 بے عِلماں نوں لُٹ لُٹ کھاویں

 جھوٹے سچے کریں اقرار

 عِلموں بس کریں او یار!

 پڑھ پڑھ مُلاں ہوئے قاضی

 اللہ عِلماں باجھوں راضی

 ہووے حرص دنوں دِن تازی

 تینوں کیتا حرص خوار

 عِلموں بس کریں او یار!

 پڑھ پڑھ مسئلے پیا سناویں

 کھانا شکّ شُبھے دا کھاویں

 دسیں ہور تے ہور کماویں

 اندر کھوٹ باہر سُچیار

 عِلموں بس کریں او یار!

 جد میں سبق عشق دا پڑھیا

 دریا دیکھ وحدت دا وڑیا

 گھمّن گھیریاں دے وچ اڑیا

 شاہ عنایت لا یا پار!

 عِلموں بس کریں او یار!

One comment on “عِلموں بس کریں او یار! بُلّھے شاہ

  1. اچهی کوشش ہے عارفانه کلام ہر دور میں پاپولر هوتا ہے

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: