3 تبصرے

یومِ آمریت و نتیجہ ہائے ڈکٹیٹریت

آج سولہ دسمبر ہے۔
ڈھیٹ اور بے ضمیر لوگوں کو لاکھ آئینے دکھاؤ چاہے انہیں انکی وہ تمام تصاویر اور موویاں پیش کرو جسمیں وہ شکست خوردہ بنے فاتح افواج کے سامنے ہتھیار اور اپنا سب کچھ ڈال رہے ہوں پھر بھی وہ اپنی حرکتوں سے باز نہیں آتے۔
ہزار تاویلیں ہیں ہزار بہانے ہیں مگر  پلٹں گراونڈ تو پلٹن گراونڈ ہے ایک ناقابلِ تردید حقیقت۔۔۔۔۔۔۔
سولہ دسمبر اپنے ساتھ کچھ اور باتیں کچھ حقیقتیں یاد دلاتا ہے۔ ایک خط ہے جو کسی بہاری (مشرقی پاکستانی) نے مغربی پاکستانی کے نام لکھا صرف ایک جملہ سمجھنے والوں کے لیے کافی ہے ” مغربی پاکستانی بھائیوں سے کہدو کہ ہم بہاری صرف پیٹ لیکر نہیں آئینگے بلکہ ایک دماغ اور ساتھ ہی کام کرنے والے دو ہاتھ بھی لائیں گے۔”
شاید اسی دماغ کے ڈر سے آج تک انہیں کوئی قبول کرنے پر تیار نہیں!

3 comments on “یومِ آمریت و نتیجہ ہائے ڈکٹیٹریت

  1. ہماری تاریخ میں اس قدر افسوسناک اور شرمناک باب رقم ہوچکے ہیں کہ سمجھ نہیں آتا، کس کس کا رونا رویا جائے۔

  2. اسلام علیکم بہاری بھائی ھم اگر آزاد ہوتے توآپ ہی کیا ہر مسلمان کی حفاظت کرتے کیوں کہ ہماے اکابرین نے پاکستان کو یسلام کا قلعہ بنانے کیلئےبنایا تھا لیکن شومئی قسمت سےہمارے بعد کے اور موجودہ لیڈروں(راہنما کہنا تو زیادتی ہو گی) نے محض اپنی حرص وحوس پوری کرنے کیلئے ہمیں اس اندھیری کھائی میں پھینک دیا ہے جہاں اندھیرا اندھیرا ہے اور باہر نکلنے کا بھی کوئی رستہ نہیں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: