8 تبصرے

سنگاپور ٢

مجھے تو حد سے زیادہ پھیلے بلکہ پھولے ہوئے سبزے نے حد درجہ متاثر کیا۔ امارات کی پرواز دوپہر کو پہنچتی ہے جب جہاز بے آف ملاکا یا ملایا  میں داخل ہوا تو دوطرفہ سبزے کی بہار، کہاں میں جس نے جیون ریگزاروں میں بِتایا ہو کہاں یہ دُھلا دُھلا سا سبزہ جس میں کسی ڈریگن کی طرح بل کھاتے مٹیالے سست رو دریا اور لال کھپریل کی چھتیں، میں کسی ننھے بچے کی طرح جہاز کے شیشے سے ناک چپکائے آس پاس سے بےخبر اس سارے منظر کو اپنے اندر اور موبائل کے کیمرے میں سمونے کی کوشش کرتا رہا۔ سعودیہ، گلف، قطر آتے جاتے ہوئے مجھے کبھی بھی کھڑکی کی طرف کی سیٹ مخصوص کرانے کا شوق نہیں ہوا، سنگاپور کے لیے کافی اصرار کے بعد کھڑکی والی سیٹ لی اور رات بھر تاروں بھرا آسمان دیکھا کیے کہ دبِ اکبر، جوزا اور سرطان کی  constellation کونسی ہیں آسمان ستاروں سے بھرا پُرا ساتھ ساتھ چلتا رہا اور میں دریائے حیرت میں گُم۔ 
دن نکلا تو پرواز سر زمینِ مشرقِ بعید پر تھی اور کسی  کے بتائے بغیر خود ہی اعلان کررہی تھی یوں ہوتی ہے سبزے کی بہار۔  آسمان بارش کے بعد کا دُھلا دھلایا دھوپ میں “ کنچے “ کی طرح چمکتا ہوا کہیں کہیں بادل ایکدم سے درمیان میں آجاتے۔
چلیں صاحب قدرت کی نیرنگیاں تو ہر انسان اپنی اپنی آنکھ سے دیکھتا ہے ہم جس منظر کو دیکھ کر دم بخود رہ جاتے ہیں وہاں کے باسیوں کے لیے وہ روزمرہ میں شامل ہوتا ہے بلکہ بعض دفعہ وہ لوگ اکتائے ہوئے ہوتے ہیں۔
ہوٹل ٨١ کی کہانی اپنی جگہ رہ گئی
میں اور عباس دونوں NRL سے تعلق رکھتے ہیں اور ١٩٨٤ سے ایکدوسرے کو جانتے بلکہ اچھی طرح جانتے اور خاصے بے تکلف ہیں لیکن ایسا سفر اور  ساتھ کا اتفاق پہلی دفعہ ہوا۔ ہم دونوں ہی ایک طبیعت اور مزاج کے یعنی منہ کے بہت بولنے والے لیکن عملاً ——
بات ہورہی ہے ہوٹل ٨١ کی کہ جناب پارٹیاں آ رہی ہیں ہوٹل میں اور جا رہی ہیں پہلے تو ہم نے کہا کہ یار یہ ہوٹل تو چھوٹا سا ہے مگر بہت مصروف لگتا ہے۔ پھر معاملہ کُھلا کہ بھائی لوگ یہ جوڑے صرف ایک گھنٹے کی بکنگ کرواتے ہیں۔ اب ہم نے پاکستانیوں کی طرح آنے جانے والوں کو تاڑنے اور چیک لسٹ بھرنی شروع کردی کہ کون کب آیا اور کب گیا۔ میرا کمرہ عباس کے سامنے تھا اور ہر آدھے گھنٹے بعد عباس کو سگریٹ کی طلب ہوتی ساتھ ہی مجھے دستک دیتا “ بھائیا تھَلے چلیے کِدرے ساڈھا کم وی بن ای جاوے“۔  (نیچے چلیں شاید ہمارا کام بھی بن جائے)
نیچے جاکر سگریٹ سے زیادہ ان بے جوڑ جوڑوں پر غور کیا جاتا۔ کئیے  ایک بابوں کو دیکھ کر ہم دونوں ایک دوسرے کو کہتے کہ یار یہ بابا بھی ستر سال کی عمر میں۔۔۔۔ ہم بھی ایک دوسرے کو ہلہ شیری دِلاتے ۔
چھوڑیں ان گندی باتوں کو اور تصویریں دیکھیں جو میں نے دورانِ پرواز لیں اور مشہورِ زمانہ DHL Balloon اور عام سے مناظر ہیں
باقی باقی     
 

8 comments on “سنگاپور ٢

  1. شکر ہے آپ نے سنگاپور کے بارے میں‌ لکھنا جاری رکھا۔ شکریہ
    تصویروں کیلیے ہم گیلری تجویز کریں‌گے وہ نئے ورڈ پریس میں ہے اور اگر آپ پرانا ورڈ پریس استعمال کرنا چاہتے ہیں تو گیلری کا پلگ ان استعمال کر سکتے ہیں۔ اس طرح آپ مختلف تصویروں‌کو ملا کر گیلری بنا لیں گے جو بہت کم جگہ گھیرے گی اور دیکھنے والا اگر چاہے گا تو تصاویر کو بڑا کرکے بھی دیکھ سکے گا یا ان کی سلائیڈ چلا لے گا۔

  2. ساری باتیں کر کے۔۔چلو جی چھوڑیں، ان باتوں میں کیا رکھا ہے۔😀

    تصاویر بہت اچھی ہیں۔خاص طور پر سمندر میں کشتیوں والی زبردست لگ رہی ہے۔

  3. میرا پاکستان
    پسندیدگی کا شکریہ، تصاویر کے لیے واقعی کچھ وقت نکال کر یا کسی کی منت سماجت کر کے کچھ کرتے ہیں کہ گیلری کا پلگ ان سیٹ ہوجائے۔
    شکریہ بوچھی
    آپ پاکستان آتے جاتے ہوئے سنگا پور کا اسٹے لیں واقعی دیکھنے کے قابل ہے اور سسٹم زبردست ہے، Song of the sea بچیوں کو بہت پسند آئے گا۔
    ماوراء
    شکریہ تصاویر پسند کرنے کا۔ سمندر میں اتنے سارے آتے جاتے جہازوں سے ہی اندازہ ہوتا ہے کہ سنگاپور کتنا بڑا تجارتی مرکز ہے۔
    اور ہاں ساری باتیں کہاں کی ہیں ابھی تو شروعات ہیں۔🙂

  4. سلام
    ورڈ پریس کا نیا ورژن لک اور فیل میں پرانے سے بہت مختلف ہے۔ اگرآپ چاہیں تو نیا اپلوڈ ہو سکتا ہے۔

  5. بدتمیز
    نیکی اور پوچھ پوچھ
    پچھلے دو دن سے ٹامک ٹوئیاں مار رہا ہوں کبھی کوئی پلگ ان ڈالتا ہوں تو کبھی کوئی نکالتا ہوں لیکن بات نہیں بن رہی تھی بلکہ کئی دفعہ تو بگڑتے بگڑتے بچی۔
    ایڈوانس میں شکریہ

  6. رضوان بھائی، یہ آخری والی تصویر تو بلیوایریا میں واقع سعودی پاک ٹاور سے ملتی جلتی ہے۔

  7. ساجد بھائی ان عمارتوں کو ہونا تو بلیو ایریا میں تھا :dsadas: بس ہماری ترجیحات کچھ اور ہیں۔ یہ اینٹ گارے کی بلڈنگیں ہماری منزل نہیں :smile

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: