7 تبصرے

کافی دنوں بعد

یوں لگتا ہے اک جُگ بیت گیا ہے سُکھ اور فراغت کا سانس لیے ہوئے بس مستقل کام اور پھر ڈیرے پر آکر بے سُدھ سو جانا۔ کبھی ایسا بھی ہوا کہ پندرہ گھنٹوں کے بجائے آدھی چھٹی یعنی 12 ہی گھنٹے بعد آٹھ بجے رہائش پر پہنچ گئے تو بھی کبھی کمپیوٹر دغا دے جاتا اور کبھی گھر والوں سے بات کرنے کے علاوہ کچھ اور کھولنے دیکھنے کی ہمت ہی نہیں ہوتی کہ سارا دن کسی نا کسی بہانے یہی اسکرین ہی تو تکتے رہتے ہیں۔ رہ گئی خبریں تو ایک تو کوئی اچھی خبر ملنے کی امید ہی نہیں ہوتی اور دوسرا پاکستانیوں کو خود اب کچھ ٹی وی شی وی دیکھنے کی ضرورت نہیں اردنی، انڈونیشیئن، ملائیشین ہمدردی سے ‘ساوتھ انڈین بِنا کسی جزبات کے(وہ اپنے باپ کے مرنے کی اطلاع بھی مشینی انداز میں دیتے ہیں) اور یو پی‘ سی پی والے  بناوٹی افسوس سے ساری کہانی بیان کر دیتے ہیں، ویسے بھی پاکستانی بھائیوں کے پاس آپس میں بھی بات کرنے کے لیے موضوعات کا سخت توڑا رہتا ہے۔
کل پرسوں دنیا کی مشہور گیس ٹربائن بنانے والے ادارے کا نمائندہ اپنی مشین کے بارے میں معلومات دے رہا تھا اسی دوران اس سے مختلف باتیں ہوتی رہیں اس نے فلورنس اور اس سے 80 کلومیٹر دور مساسہ ( انگریزی لکھنے کی ہمت نہیں ہے) میں اپنی فیکٹری اور شہر کی وڈیو بھی دکھائی باتوں میں ذکر چلا طیاروں کے انجن کا تو اس نے بتایا کہ بوئنگ کا پورا انجن (گیس ٹربائن) پانچ سے چھ گھنٹوں میں تبدیل کر دیتے ہیں اور اس کی وڈیو بھی دکھائی۔ اپنے ایک ساتھی نے کہا کہ “اسین وی کامرے وچ معراج دا ایہی حشر کردے ساں ایہی پھرتیاں تے ایئر فرانس نوں لے بیٹھیاں نیں“۔
اٹالیئن اپنے مزیدار انگریزی لہجے کے ساتھ کہانیاں سناتا رہا ساتھ ہی اپنی مِنی کوپر کو بھی مِس کرتا تھا کہ میں نے کبھی بھی تیز گاڑی نہیں چلائی لیکن اب سے پانچ ماہ پہلے ایک دن ایسے ہی ٹیسٹ کرنے کے لیے اپنی گاڑی کو ذرا تیز کیا تو وہ 210 پر پہنچ گئی لیکن ساتھ ہی جھماکا بھی ہوا اور پولیس والے نے مجھ سے لائسنس لیکر چھ ماہ بعد کی تاریخ دے دی اب سوائے سائیکل کے میں کچھ اور نہیں چلا سکتا!
یہ سُن کر مجھے اپنا وطن بڑا یاد آیا۔

7 comments on “کافی دنوں بعد

  1. چلیئے کسی وجہ سے تو وطن یاد آیا ۔

  2. خوشی ہوئی رضوان صاحب آپ کی تحریر دیکھ کر۔

  3. اسلام علیکم جنابرضوان بھائی پہلی بار آئے ہیں آپ کے بلاگ پر ۔مسٹر کنفیوز فرام کامی ورڈپریس سے ۔انشااللہ چکر لگتا رہے گا آپ لکتے رہیں ۔
    http://kami.wordpress.pk

  4. السلام علیکم ، رضوان بھائی ، جلدی سے فرصت نکال لیا کریں بلاگ پر لکھنے کے لیے ۔ آپ کی تحریر سے بہت سی باتیں سیکھنے کو ملتی ہیں ۔

  5. جناب آپ تو ایسے غائب ہوئے جیسے ۔۔۔، میرا مطلب ہے مہینوں سے دکھے نہیں تھے تو چنتا ہو رہی تھی۔ اب آپ کی غیر موجودگی میں اپنی چنتا کا کیا اظہار کرتا؟ ویسے بھی ابو تو کہتے ہیں کہ میں جب بھی بولتا ہوں کفن پھاڑ کر ہی بولتا ہوں
    سو میں تو ویلکم بیک اور نئی پوسٹ کی فرمائش کر کے چپ ہی رہتا ہوں

  6. آپ احباب کی قدر افزائی کا بہت ہی مشکور ہوں ساتھ ہی آجکل مجبور ہوں آخر کو بندہ مزدور ہوں اور آج کل اپنی اوقات کی بے وقعتی کا اندازہ ہو رہا ہے۔
    افتخار اجمل صاحب شکریہ ہمیں وطن اسی طرح جانے کیوں یاد آتاہے ؟
    وارث بھائی بہت شکریہ اس عزت افزائی کا
    کامی صاحب خوش آمدید
    شگفتہ جلدی کا کام شیطان کا۔ اطمینان ہی سے لکھیں گے رہ گئی سکھانے والی باتیں تو آپ تو شرمندہ کر رہی ہیں۔
    ڈفر صاحب واقعی ایسی چنتا سے بے رخی ہی بھلی
    بولتے رہو بھائی آپ کے کفن پھاڑ کے بولنے سے لگتا ہے کہ ہم قبرستان میں نہیں ہیں زندگی کی رمق اور خواہش باقی ہے۔

  7. بہت اچھا لکھتے ہیں آپ

    امید

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: